Tuesday, April 23
Shadow

نظم پارے / اختر شہاب

اختر شہاب
*پردہ*

کج دیو ایناں کنداں نوں
سیمنٹ دے پلستر نال۔
تاں جے!
ایہہ جو کج سندیاں نے؟
اوہ بول نہ سکن!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

*بھاگ*
اوہ کہندی سی ۔ ۔ !
جے میں اپنے دکھ کنداں نوں دس دیاں ۔۔
تے کنداں وی روپین۔
پر اوہ دُکھاں دی ماری ۔ ۔
مینوں!
اک نواں دکھ دے گئی اے!!!
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

×

Send a message to us on WhatsApp

× Contact