Friday, April 19
Shadow

نثری نظم ” شب انتظار”/ سنعیہ مرزا

سنعیہ مرزا

شب انتظار میرا ساتھ دے

میں کوئی مریض محب نہیں

میں تو بس قریب المرگ ہوں

شب انتظار

مجھے ساتھ رکھ

مجھے روک دے

کہ نہ مر سکوں

یہی انتظار شب انتظار

میں کر سکوں

ذرا روک لے

میں نہ مر سکوں

مجھے تھام کے

میرا نام لے

مجھے اب بلا

مجھے کہہ دے

بس۔۔۔۔

شب انتظار

میری ایک سن

میری اک نہ سن

مجھے اپنی کرنی سے مار دے

میں کوئی مریض محب نہیں

میں تو بس قریب المرگ ہوں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

×

Send a message to us on WhatsApp

× Contact