Friday, May 24
Shadow

مجھے تم اچھے لگتے ہو ہانیہ ارمیا

ہانیہ ارمیا

مجھے تم سے محبت نہیں ہے
لیکن آج کی رات
کہنی ہے یہ بات
مجھے تم اچھے لگتے ہو
کل صبح کے بعد
چھڑا لوں گی میں ہاتھ
اس ایک وعدے کے ساتھ
کہ پھر نہ ہو گی ملاقات
مگر بس آج کی رات
کہہ لینے دو یہ بات
مجھے تم اچھے لگتے ہو
کچھ کچھ اپنے لگتے ہو
مجھے تم اچھے لگتے ہو
دور جا کے ذرا سا پلٹنا
کچھ پل کو رکنا
پھر اجنبی ہو جانا
نہیں اچھی لگتی یہ تکرار
بے شک نہیں ہے تم سے پیار
پر کہنے میں نہیں ہے انکار
مجھے تم اچھے لگتے ہو
کچھ کچھ اپنے لگتے ہو
گر جھوٹ بھی بولو
پر جانے کیوں سچے لگتے ہو
مجھے تم اچھے لگتے ہو
گو روٹھنے منانے والا رشتہ نہیں ہے
مگر بےنام ہی سہی
یہ تعلق احساس سے بنا ہے
اس احساس کو دو لفظوں کا سنگار
جو چھو لے من کے تار
تم بھی کہہ دو ناں اک بار
بس آج کی رات
وہ چھوٹی سی اک بات
مجھے تم اچھے لگتے ہو

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

×

Send a message to us on WhatsApp

× Contact