Tuesday, May 28
Shadow

Tag: نثری نظم

آزاد نظم : سبین علی

آزاد نظم : سبین علی

شاعری
لکھنا اور باغبانی کرنا ایک جیسا کام ہےکئی بار  میری کتابوں میں سےسبزہ پھوٹ پڑتا ہےپھول لہلانے لگتے ہیںاور کئی بار مٹی میں لگیڈرائی سینیا کی قلم سےنظم امڈ آتی ہےپوٹونیا اور یوفوربیا کے پھولکہانی میں جا سموتے ہیںاور پرانی کتاب کے ورق پلٹتےہار سنگھار کے نارنجی پھول قرطاس پرمہکنے لگتے ہیںان کہانیوں میں وہ  کالی چڑیاگھونسا بناتی ہےجسے کوئی روشندانپناہ نہیں دیتاکبھی کبھی نظم آنسوؤں میں ڈھل جاتی  ہےگویا باڑ کے کناروں سےمٹی کو سیراب کرتا پانیچپکے سے بہہ جائےاور سبز گھاس پرشبنم مسکانے لگےفطرت میری کاوش سے بڑھ کرمہربان ہوتی ہے  مجھ پرآدھے ادھورے لفظوںاور سوکھی ٹہنیوں کوروئیدگی بخشتی ہےجا بجا لِلًی کے پھولسربسجود ہوتے ہیں ...
×

Send a message to us on WhatsApp

× Contact