Friday, May 24
Shadow

اے میرے تشفیعِ مَن| مومنہ مقصود

مومنہ مقصود

اے میرے تشفیعِ مَن تو میرا تسکینِ جان
بعد تیرے فرشِ گل کشتِ سخن اجڑا دیار
صرف تُجھ کوسوچنامیرےقرائن کی بساط
تُجھ میں ہی محبوس میں اور میری چشمِ انتظار
میں ہوں حیوان ظریف پر تیری فصاحت مرحبا
اپنی ہنسی اور مسکراہٹ تُجھ پہ واروں کس طرح
ہم تمہارے اشتیاق مطلوب ہمیں تم بسروچشم
دل پے آویزاں اور مزین تیرا اُنس اور مرتبہ
اے میرے شاخِ بُریدہ مُجھ سے رہنا استوار
ختم ہوگی عہدِ خزاں اور آئیں گے پھر برگ و بار
پہلے تیرے اُنس کے رنگ بیان نے رکھا ہوا مسرور تھا
اب تو اس آتشِ غم میں نِیم وحشت اِضطراب

لکھاری کا تعارف

بوٹانسٹ مومنہ مقصود فیصل آباد

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

×

Send a message to us on WhatsApp

× Contact