Tuesday, May 21
Shadow

غزل :جبیں نازاں ، نئی دہلی


(بے یارومددگار فلسطینیوں کے نام )
___________________
خاموش ہیں سب آہ و بُکا تک نہیں آتی
غزّہ  کے اسیروں کی صدا تک نہیں آتی

ملبے سے نکلتی ہوئی بچی نے پکارا
قبروں میں پڑے، پھر بھی قضا تک نہیں آتی

اک بھائی نے بھائی سے کہا آخری جملہ
یوسف کے برادر کو ،حیا تک نہیں آتی

سر گشتگی مت  پوچھ ان آشُفتہ سروں کی
  مشتاقِ شہادت ہیں  فنا تک نہیں آتی

بارود کی بُو اوڑھے ہیں مسموم فضائیں
تازہ کسی کھڑکی سے ہوا تک نہیں آتی

مظلوم بظاہر ، تو بنے پھرتے ہیں قاتل
 لعنت ہے، ندامت کی ادا تک نہیں آتی

 نازاں کی تو بستی  کو   کِیا  خاک ، جلا کر
پر آنچ ترے بندِ قبا تک نہیں آتی
____________________
جبیں نازاں_  نئی دہلی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

×

Send a message to us on WhatsApp

× Contact